Hacker offers stolen data from Twitter for sale

 

Hacker offers stolen data from Twitter for sale ہیکر نے ٹوئٹر سے چرایا ہوا ڈیٹا فروخت کے لیے پیش کردیا

Hacker offers stolen data from Twitter for sale

ہیکر نے ٹوئٹر سے چرایا ہوا ڈیٹا فروخت کے لیے پیش کردیا


جنوری کے مہینے میں ٹوئٹر پر سائبر حملے کے نتیجے میں چرایا ہوا ڈیٹا ہیکر نے 30 ہزار ڈالرز میں فروخت کے لیے پیش کر دیا ہے۔

جنوری کے مہینے میں ٹوئٹر پر ایک سائبر حملے کے نتیجے میں 54 لاکھ یوزرز کا ڈیٹا چوری کر لیا گیا تھا، جسے اب ہیکر کی جانب سے آن لائن فروخت کے لیے پیش کیا جا رہا ہے۔

دوسری جانب ٹوئٹر کی جانب سے ڈیٹا چوری ہونے کو ایک  سکیورٹی مسئلہ قرار دیتے ہوئے، ’زیرینووسکی‘ نامی ہیکر کو ڈھونڈھنے والے کے لیے 5 ہزار 40 ڈالرز کی انعامی رقم کا اعلان کیا گیا ہے۔

ری اسٹور پرائویسی کے سووین ٹیلر کا کہنا ہے کہ ٹوئٹر کی سیکیورٹی کی کمزوری کا فائدہ اٹھا کر چرایا گیا ڈیٹا اب ایک ہیکر ’زیرینووسکی‘ کے یوزر نیم سے ایک ہیکر فروخت کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔ 

ان کا  کہنا تھا کہ ڈیٹا فروخت کرنے والا ہیکر، ہیکنگ فورم پر ڈیول کے نام سے آتا ہے اور اسکی طرف سے چرائے ہوئے ڈیٹا میں عام یوزرز سمیت تخلیقکار، سیلیبرٹیز اور کمپنیوں کا ڈیٹا شامل ہے۔

ٹیلر کا کہنا تھا کہ ری اسٹور پرائویسی کی جانب سےہیکر کے بارے میں مزید جاننے کے لئے ڈیٹا بیس فروخت کرنے والے اس ہیکر سے  رابطہ کیا گیا تو اس نے ڈیٹا بیس کے بدلے 30 ہزار ڈالرز کا مطالبہ کر دیا ہے۔

ری اسٹور پرائیویسی کے مطابق سیلر کے جانب سے ڈیٹا کی فروخت کے حوالے سے بریچ فورمز کی ویب سائیٹ پر پوسٹ ڈالی گئی تھی اور ویب سائیٹ کے مالک کی جانب سے ڈیٹا کے اصل ہونے کی تصدیق کی گئی ہے۔



حوالہ

Advertisement


Advertisement